سری لنکا خطرناک ٹیم نہیں مگر۔۔۔“ وقار یونس نے قومی ٹیم کو مفید مشورہ دیتے ہوئے ایسے پہلو بتا دئیے کہ آپ بھی حمایت کریں گے

144

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لائیک کریں شکریہ
پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وقار یونس نے کہا ہے کہ عدم تسلسل کا ٹیگ ایک بار پھر پاکستان ٹیم کے ساتھ لگ گیا ہے اور اس کی وجہ سسٹم ہے کیونکہ نوجوان پلیئرز بغیر سسٹم کے ٹیم میں آتے ہیں ، سری لنکا خطرناک ٹیم نہیں لیکن پاکستان اسے آسان نہیں لے سکتا۔


تفصیلات کے مطابق سابق کپتان نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کیلئے لکھے گئے کالم میں کہا ہے کہ قومی ٹیم کی کارکردگی میں عدم تسلسل کی وجہ سسٹم ہے ۔ نوجوان سسٹم کے بغیر ہی ٹیم میں آتے ہیں، پاکستان کرکٹ میں جو پریشر برداشت کر گیا وہ عظیم کھلاڑیوں کی فہرست میں آ جائے گا، پاکستان کے نوجوان کھلاڑیوں کو پریشر سے ڈیل کرنا سیکھنا ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی پچھلے دو میچز میں کارکردگی ایک دوسرے کے برعکس رہی مگر پاکستان ٹیم ہمیشہ ایسے ہی پرفارم کرتی رہی ہے اور یقینا خراب آغاز کے بعد شاندار فتح سے حوصلے بلند ہوئے ہوں گے۔ انہوں نے لکھا کہ سری لنکا خطرناک ٹیم نہیں مگر اسے آسان نہیں لینا چاہئے کیونکہ ٹورنامنٹ میں کسی بھی ٹیم کو آسان لینا غلط ہو گا، لاستھ ملنگا نے بتا دیا ہے کہ اب بھی اس میں دم ہے، مضبوط ٹیموں آسٹریلیا اور بھارت کیخلاف میچ سے قبل سری لنکا سے جیت ضروری ہے۔