شاہد آفریدی نے اپنی کتاب میں ایسی کیا بات لکھ دی کہ خواتین غصے سے آگ بگولا ہوگئیں

176

کرکٹ سے جڑی ہر خبر اور زبردست ویڈیوز کے لیے ہمارا پیج لائیک کریں شکریہ
شاہد آفریدی کی کتاب حال ہی میں منظرعام پر آئی ہے جس میں انہوں نے کئی رازوں سے پردہ اٹھایا ہے تاہم کتاب میں انہوں نے ایک ایسی بات بھی لکھ دی جس نے حقوق نسواں کی کارکن خواتین کو آگ بگولا کر دیا


خواتین نے شاہد آفریدی پر تنقید شروع کر دی۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق شاہد آفریدی نے کتاب میں لکھا تھا کہ ”میں اپنی بیٹیوں کو کبھی ’آﺅٹ ڈور سپورٹس‘ کی اجازت نہیں دوں گا۔“ اس جملے پر حقوق نسواں کی کارکن خواتین نے اس قدر ہنگامہ برپا کیا کہ شاہد آفریدی کو بھی بولنا پڑ گیا۔ رپورٹ کے مطابق شاہد آفریدی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ان خواتین کو جواب دیتے ہوئے لکھا کہ ”میں لوگوں کے کاموں کو دیکھ ان کے متعلق کوئی فیصلہ نہیں کرتا اور نہ ہی کسی کی زندگی میں دخل اندازی کرتا ہوں۔ میں توقع کرتا ہوں کہ لوگ بھی میری زندگی میں دخل اندازی مت کریں۔میری بیٹیاں میری زندگی کا اثاثہ ہیں۔ میری زندگی انہی کے گرد گھومتی ہے۔ وہ زندگی میں بہت کچھ کرنا چاہتی ہیں اور میں ایک ذمہ دار باپ کے طور پر ان کی رہنمائی کروں گا۔“ میری بیٹیاں میری زندگی کا اثاثہ ہیں۔ میری زندگی انہی کے گرد گھومتی ہے۔ وہ زندگی میں بہت کچھ کرنا چاہتی ہیں اور میں ایک ذمہ دار باپ کے طور پر ان کی رہنمائی کروں گا۔“